کاروبار

فکر وخیالات

زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

متحدہ عرب امارت: برج خلیفہ کی بالائی منزل فروخت کے لیے پیش

Administrators

دبئی،25دسمبر(ایجنسیاں)۔
متحدہ عرب امارات کی برج خلیفہ کی ملک کمپنی عمار کی جانب سے برج خلیفہ کی بالکینیوں اور چھت پر مشتمل بالائی منزل کو فروخت کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔ پراپرٹی ڈیولپر کمپنی کی طرف سے اس کی بالائی منزل کی قیمت ایک ارب امریکی ڈالر رکھی گئی ہے جو کہ یواے ای کی کرنسی میں3.67درہم کے برابر ہے۔ سیاحوں کے درمیان بے پناہ کشش رکھنے والی یہ بالائی منزل ہے جس پر گزشتہ سال ایک کروڑ 60لاکھ کے قریب سیاحوں نے دبئی کا نظارہ کیا تھا، اور اس منزل پر سیاحوں کے آنے کی وجہ سے مجموعی طور پر60سے70کروڑ درہم کی آمدنی حاصل ہوئی تھی۔
حالانکہ کمپنی کی جانب سے اس کو فروخت کئے جانے کے بارے میں ابھی تک کوئی ردعمل سامنے نہیں آیا ہے۔واضح رہے کہ دبئی کا نظارہ کرنے کیلئے برج خلیفہ میںتین بالکونی نما چھتیں بنائی گئی ہیں جو124ویں منزل،125ویں منزل اور148ویں منزل پر واقع ہیں۔ سب سے بلند ترین چھت555میٹر کی بلندی پر واقع ہے۔ جو بھی سیاح ان منزلوں پر واقع چھتوں سے دبئی کا نظارہ کرنا چاہتے ہیں انہیں378درہم کی ادائیگی کرنی ہوتی ہے۔جبکہ صرف 124ویں اور 125 ویں منزل سے نظارہ کرنے والوں کو 149درہم فی کس کے حساب سے ادا کرنا پڑتے ہیں۔ بین الاقوامی خبر رساں ایجنسی رائٹرز کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ برج خلیفہ کے ان بالکینیوں کو فروخت کرنے کے لیے اسٹینڈرڈ چارٹرڈ بینک کو ایڈوائزر کے طور پر مقرر کیا گیا ہے۔ عِمار کا 2019ءمیں برج خلیفہ سے حاصل ہونے والی آمدنی 362 ملین ڈالر تک پہنچ گئی، اس طرح 2018ءکے دوران کمائے گئے 302ملین ڈالر کے مقابلے میں 2019ءمیں 20 فیصد کمائی کااضافہ ریکارڈ کیا گیا۔
یاد رہے کہ برج خلیفہ دنیا کی بلند ترین عمارت ہے، یہ عمارت اتنی خوبصورت اور شاندار ہے اور فنِ تعمیر کا ایسا شاہکار ہے کہ دنیا بھر سے لاکھوں سیاح صرف اس کو دیکھنے کی خاطر ہی امارات کا رخ کرتے ہیں۔ جبکہ کوئی بھی شخص متحدہ عرب امارات کی سیر کو آئے تو وہ برج خلیفہ ضرور دیکھنے کی خواہش رکھتا ہے۔ اس بین الاقوامی شہرت کی حامل عمارت کو اندر اور باہر سے دیکھنے کے لیے ہر وقت ہزاروں افراد کا تانتا بندھا رہتا ہے۔

You May Also Like

Notify me when new comments are added.