کاروبار

فکر وخیالات

زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

شاہین باغ لیگل کمیٹی میں اختلاف، سپریم کورٹ میں مظاہرین کا موقف پیش نہیں کریں گے محمود پراچہ

Administrators

ہماری دنیا بیورو

نئی دہلی،15فروری۔ شاہین باغ میں شہریت ترمیمی قانون(سی اے اے ) اور قومی شہری رجسٹر (این آرسی) کے خلاف دھرنامظاہرہ مسلسل جاری ہے۔ یہ شاہراہ کو کھلوانے کو لے کر داخل عرضی پر سپریم کورٹ 17 فروری کو سماعت کرے گا۔ اب اس سماعت کے دوران شاہین باغ میں مظاہرہ کررہیں خواتین بھی اپنا موقف رکھنے کی تیاری کر رہی ہیں۔

مظاہرے میں والنٹیئرکاکردار اداکرنے والے سونو وارثی نے کہاکہ شاہین باغ کو لے کر سپریم کورٹ میں سماعت ہورہی ہے اور شاہین باغ کی طرف سے کوئی فریق نہیں ہے۔ محمود پراچا اپنے آپ کو لیگل اتھارٹی بنا کر پیش کر رہے ہیں، جو کہ غلط ہے۔ نہ ہی ان کے پاس یہاں کاوکالت نامہ ہے اور نہ ہی اور کچھ۔ یہاں جو بنیادی چہرہ ہے، وہ ہیں یہاں کی خواتین ہیں۔ ہم سپریم کورٹ میں بھی خواتین کو آگے رکھیں گے، جن میں چنندہ دادئیاں’یعنی دبنگ دادئیاں ہوں گی۔انہوں نے کہاکہ شاہین باغ نے طے کیا ہے کہ اب ہم اپنا قانونی موقف سپریم کورٹ میں رکھیں گے۔

اس کے لئے تیاری کی جا رہی ہے، جو بھی ہمارا لیگل پینل ہوگا، دادیوں کے ساتھ پیش کریں گے۔ فی الحال تمام متبادل پر کام کیا جا رہا ہے اور جلد ہی اس کی اطلاع دی جائے گی۔ ایڈووکیٹ انس تنویر صدیقی شاہین باغ کی جانب سے اپنا موقف رکھیں گے۔

You May Also Like

Notify me when new comments are added.