کاروبار

فکر وخیالات

زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

کوالالمپور کانفرنس کے بعد حرکت میں آیا او آئی سی، بتایاامت میں انتشار پیدا کرنے کی سازش

Administrators

جدہ،25دسمبر(ایجنسیاں)۔

سعودی عرب کے بادشاہ سلمان بن عبدالعزیز نے اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) کو اسلامی دنیا کی متحدہ آواز کے طور پر کردار ادا کرنے پرزور دیا۔خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی صدارت میں کابینہ کا اجلاس اوآئی سی کی 1969ءمیں قیام کے موقع پر ہوا۔ سعودی عرب کی میڈیا رپورٹ کے مطابق کابینہ نے اپنے ایک بیان میں اسلامی تعاون تنظیم کے صدر دفاتر اور اس کے رکن ممالک کی میزبانی سعودی عرب کیلئے اعزاز بتایا۔اجلاس میں او آئی سی سے متعلق امور کے علاوہ ویژن2030کے اہداف کے حصول کے لیے اقدامات پر بھی غور کیا گیا ہے اور کابینہ نے سعودی عرب کے اس عزم کا اظہار کیا ہے کہ اسلامی اقوام کے مفادات کے حصول کو یقینی بنایا جائے گا اور سعودی عرب کے اقتصادی اصلاحات کے عمل کو جاری رکھا جائے گا۔
واضح رہے کہ اس سے ترکی، ایران، قطر اور ملیشیا کے اشتراک سے ہونے والاکوالالمپور کانفرنس پر اوآئی سی کے جنرل سکریٹری نے شدیدردعمل کا اظہار کیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ یہ امت میں انتشار پیدا کرنے کی کوشش ہے۔ ا ن کا کہنا ہے کہ او آئی سی سے باہر کسی بھی عنوان سے مشترکہ جدو جہد اسلام اور مسلمانوں کو کمزورکر دیگی۔
او آئی سی کے سیکریٹری جنرل کا کہنا ہے کہ کوالالمپور کانفرنس امت میں انتشار پیدا کرنے کی کوشش ہے۔ انھوں نے کہا ہے کہ کوالالمپور کانفرنس امت میں دراڑ ڈالنے کی کوشش ہے، اسلامی تعاون تنظیم اسلام کو جوڑنے والی تنظیم ہے۔ یاد رہے کہ ملیشیا کے وزیراعظم ماًثر محمد اور سعودی شاہ سلمان کے مابین ٹیلیفونک رابطہ ہوا تھا۔وزیراعظم مہاتیر محمد نے سعودی شاہ سلمان بن عبدالعزیز کو فون کر کے کوالالمپور میں ہونے والے سربراہی اجلاس کے حوالے سے اعتماد میں لیا تھا۔

You May Also Like

Notify me when new comments are added.