کاروبار

فکر وخیالات

زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

سعودی عرب اوریواے ای کے درمیان دوڑے گی دنیا کی سب سے تیز ٹرین،منٹوں میں پہنچے گی ریاض سے دبئی

Administrators

دبئی،19جنوری(ایجنسی)۔
سعودی عرب کی راجدھانی ریاض سے آپ دبئی جاناچاہتے ہیں وہ بھی بغیرفضائی سفر کے اور آپ چاہتے کہ صرف آپ ایک گھنٹے کے اندر پہنچ جائیں تو یہ آپ کا خواب جلد ہی پورا ہونے والا ہے۔ آپ بغیر فضائی سفر کے دبئی سے ریاض پہنچیں صرف 48 منٹ میںپہنچ جائیں گے۔ خلیجی ممالک میں دنیا کا سب سے جدید اور تیز ترین ٹرانسپورٹ منصوبہ ہائپر لوپ 2024 تک شروع ہونے جارہا ہے۔میڈیارپورٹ کے مطابق خلیجی ممالک میں دنیا کے سب سے جدید اور تیز ترین ٹرانسپورٹ منصوبے ہائپر لوپ کے آغاز کی تیاریاںکافی زوروشور سے کی جارہی ہیں۔میڈیارپورٹ کے مطابق اس منصوبے پر کام کرنے والی کمپنی کا کہنا ہے کہ خلیجی ممالک میں اس منصوبے کا باقاعدہ آغاز 2024 یا 2025 تک کر دیا جائے۔

متحدہ عرب امارات میں شاہراہوں پر ٹول ٹیکس لگانے سے متعلق وائرل خبر میں کوئی صداقت نہیں

منصوبے کا آغاز دبئی سے ہوگا۔ اس حوالے سے تیزی سے کام جاری ہے۔ رپورٹ کے مطابق اس جدید اور تیز رفتارٹرین سے گھنٹوں کی طویل مسافت منٹوں میں طے ہو سکے گی بلکہ اس کا کرایہ جہاز سے بھی سستا ہوگا۔بتایا جا رہا ہے کہ ہائپر لوپ ٹرین کی مدد سے دبئی سے سعودی عرب کی راجدھانی ریاض تک کا سفر صرف 48 منٹوں میں مکمل کیا جا سکے گا۔ اس جدید اور تیز رفتار ریل کی بوگی پٹری پر دوڑنے کے بجائے ایک ٹیوب میں سفر کرے گی۔

غیر ملکی ملازمین کیلئے خوشخبری،کوئی نیا ٹیکس نہیں لگائے گا سعودی عرب

بوگی یا کیپسول پریشرائزڈ ہوا کے دوش پر سفر کرتی ہے ،یعنی کیپسول اور ٹیوب میں کسی قسم کی رگڑ پیدا نہیں ہوتی۔ ٹیوب میں ہوا کا دباﺅ قدرتی دباﺅ سے کم رکھا جاتا ہے تاکہ کیپسول کو ہوا کے دباﺅ سے پیدا ہونے والی رکاوٹ کا سامنا نہ کرنا پڑے اور کیپسول تیز رفتاری سے سفر کر سکے۔ انجن کے طور پر بجلی اور معلق مقناطیس کا استعمال کیا جا سکتا ہے۔رپورٹ کے مطابق اس منصوبے کی مدد سے تمام خلیجی ممالک کو ایک دوسرے سے جوڑ دیا جائے گا۔ اس منصوبے کی مدد سے تمام خلیجی ممالک کے کسی بھی شہر میں صرف چند منٹوں کے اندر پہنچا جا سکے گا۔ اس منصوبے کو انسانی تاریخ کا سب سے جدید ٹرانسپورٹ منصوبہ قرار دیا جا رہا ہے۔

You May Also Like

Notify me when new comments are added.