کاروبار

فکر وخیالات

زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

دہلی اقلیتی کمیشن کا پولیس کمشنر سے نرسمہناد سرسوتی کے خلاف قانونی کارروائی کا مطالبہ

ایچ ڈی نیوز،ہفتہ،10 اپریل 2021

نئی دہلی،07اپریل(ہ س)۔
 دہلی اقلیتی کمیشن نے 2 اپریل کو پریس کلب آف انڈیا ، رائے سینا روڈ میں منعقدہ ایک پریس کانفرنس کے حوالے سے ، دیپک تیاگی عرف یتی نرسمہناد سرسوتی کے خلاف مناسب قانونی کارروائی کے لئے دہلی پولیس کمشنر کو ایک نوٹس بھجوایا ہے۔
کمیشن کے چیئرمین ذاکر خان کے ذریعہ بھیجے گئے نوٹس میں کہا گیا ہے کہ دیپک تیاگی عرف یتی نرسمہناد سرسوتی نے ایک پریس کانفرنس کے ذریعے سوچی سمجھی حکمت عملی کے تحت دہلی کے فرقہ وارانہ ماحول کو خراب کرنے کی کوشش کی ہے۔ان کا کہنا ہے کہ مجھے اس دن دیپک تیاگی عرف یتی نرسمہناد سرسوتی کے ذریعہ کہی گئی باتوں سے روشناس کرتے ہوئے بے حد تکلیف ہورہی ہے۔ اس نے پیغمبر حضرت محمد ﷺ کے خلاف جان بوجھ کر انتہائی تکلیف دہ ، فحش آمیز الفاظ کا جان بوجھ کر استعمال کرکے نفرت پر مبنی مسلم سماج کے جذبات کو بھڑکانے اور فساد بھڑکانے کی پرزور سازش کو انجام دیا ہے۔ دومذاہب کے درمیان جان بوجھ کر دشمنی پیدا کرنے کی کوشش کی ہے۔یہ سبھی باتیں دہلی میں واقع پریس کلب میں کہی گئی ہیں اس لئے دہلی پولس کا فرض بنتا ہے کہ وہ اس واقعہ کے ذمہ دار شخص کے خلاف مجرمانہ مقدمہ درج کرکے اسے گرفتار کرکے جیل میں ڈالنے کا کام کرے۔
دیپک تیاگی عرف یتی نرسمہناد سرسوتی کے اس بیان نے جو دہلی میں گزشتہ سال ہوئے فرقہ وارانہ فسادات سے ابھی تک پوری طرح ابھر نہیں پائی ہے گھی ڈالنے کا کام کیا ہے۔ اسی سلسلے میں مٹیا محل اسمبلی حلقہ سے ممبراسمبلی شعیب اقبال اور دہلی گیٹ کارپوریشن وارڈ سے کونسلر آل محمد اقبال نے ایک نمائندہ وفد کے ساتھ دہلی کے لیفٹیننٹ گورنر انل بیجل سے ملاقات کرکے انہیں ایک میمورنڈم سونپا ہے۔ انہوں نے اپنے میمورنڈم میں یتی نرسمہناد سرسوتی کے خلاف مقدمہ درج کرکے اسے گرفتار کئے جانے کا مطالبہ کیا ہے۔ دہلی ریاستی کانگریس کمیٹی کے نائب صدر علی مہندی کے ذریعہ بھی نئی دہلی علاقہ کے ڈی سی پی سے ملاقات کرکے انہیں بھی میمورنڈم سونپ کر سوامی کے خلاف مقدمہ درج کرکے اسے گرفتار کئے جانے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ آل انڈیا اتحاد المسلمین کے دہلی ریاست کے صدر کلیم الحفیظ نے بھی اوکھلا تھانہ صدر کو خط بھیج کر سوامی کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا مطالبہ کیاہے۔

You May Also Like

Notify me when new comments are added.