کاروبار

فکر وخیالات

زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

دارالعلوم دیوبند نے عیدالاضحی کے متعلق حکومت سے کیا بڑا مطالبہ ،یہی ہر مسلمان کی بھی خواہش ہے

Administrators

رضوان سلمانی ؍ ہماری دنیا بیورو
دیوبند،20/جولائی۔ بین الاقوامی شہرت یافتہ دینی دانشگاہ دارالعلوم دیوبندنے ریاستی وزیراعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ کے نام ایک میمورنڈم بھیج کر مسلمانوں کے دوسرے سب سے بڑے تہوار عیدالاضحی پر عیدگاہ میں نمازِعیدالاضحی اداکرنے اور قربانی کے لئے مویشیوں کی خریدوفروخت کرنے سے متعلق اجازت اورواضح ہدایات جاری کرنے کامطالبہ کیا ہے۔ تفصیل کے مطابق پیر کے روز دارالعلوم دیوبند کے کارگزار مہتمم مولانا عبدالخالق مدراسی نے دیوبند کے ایس ڈی ایم راکیش کمار سنگھ کے توسط سے ریاستی وزیراعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ کے نام ایک پانچ نکاتی میمورنڈم بھیجا ہے۔ ارسال کئے گئے میمورنڈم میں کہاگیاہے کہ اب عیدالاضحی کاتہوار بالکل نزدیک ہے چونکہ مذہب اسلام میں قربانی بہت بڑی عبادت ہے اور اس کا کوئی دوسرا متبادل بھی نہیں ہے۔
میمورنڈم میں یاددہانی کرائی گئی ہے کہ پورے ملک میں کورونا انفیکشن کی وجہ سے مختلف قسم کی پابندیاں نافذ ہیں، اس لئے تہوار کی تیاری میں مسلمانوں کو مشکلات کاسامنا کرناپڑرہاہے،جس کی وجہ سے غیر اطمینان بخش حالات بنے ہوئے ہیں۔ میمورنڈم میں مطالبہ کیاگیاہے کہ عید الاضحی کے مدنظر تاریخ اور دنوں کے اعتبار سے سنیچر اور اتوار کے روز کا لاک ڈاؤن مؤخر کیاجائے تاکہ عیدالاضحی کی سرگرمیاں متأثر نہ ہوں۔ اس کے علاوہ عیدالاضحی کی نماز سوشل ڈسٹینسنگ کے ساتھ عیدگاہ میں اداکرنے کی اجازت دی جائے۔ کارگزار مہتمم نے کہا کہ ان لاک کے باوجود بہت سے مقامات پر مویشیوں کے بازار لگانے کی مقامی انتظامیہ کی جانب سے اجازت نہیں دی جارہی ہے اور قربانی کے لئے مویشیوں کولانے اور لے جانے والوں کا استحصال کیا جارہاہے۔ اس لئے اس سلسلہ میں اجازت کے ساتھ واضح ہدایات جاری کی جائیں۔ انھوں نے کہا کہ بازاروں، شاپنگ مالس، فیکٹریوں اور دیگر تجارتی مراکز کے طرز پر سوشل ڈسٹینسنگ کی شرط کے ساتھ تعداد کی پابندی کے بغیر مساجد میں پانچوں وقت کی نمازیں اداکرنے کی بھی اجازت دی جائے۔
میمورنڈم میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ حکومت کے اس قدم سے ملک اور بیرون ملک اچھاپیغام جائے گا اور ریاست کا نام روشن ہوگا۔ یاد رہے کہ عیدالاضحی کا تہوار تین دنوں تک منایاجاتا ہے۔ اس سال شمسی تاریخ کے مطابق 31/جولائی یا1/اگست سے تین دنوں تک یہ تہوار منایا جائے گا۔ لیکن اترپردیش کی حکومت کی جانب سے کورونا وائرس اور دیگر موسمی نیز انفیکشن سے پھیلنے والی بیماریوں کی روک تھام کے لئے ہرایک سنیچر اور اتوار کو لاک ڈاؤن کے نفاذ کا اعلان کیاگیاہے۔ ایسے میں لاک ڈاؤن کی وجہ سے مسلمانوں کو قربانی کے عظیم تہورا کومنانے میں بہت زیادہ دشواریوں کاسامناکرنا پڑیگا۔ مذکورہ تمام حالات، پابندیوں اور بندشوں کی وجہ سے مسلمانوں میں اضطرابی کیفیت کا ماحول ہے۔ لہٰذا ان تمام حالات کوذہن میں رکھتے ہوئے دارالعلوم دیوبند ریاستی وزیراعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ سے اس میمورنڈم کے ذریعہ مطالبہ کرتا ہے کہ وہ عیدالاضحی سے متعلق واضح ہدایات جاری کریں۔ 

You May Also Like

Notify me when new comments are added.